قومی

سپریم کورٹ نےنجی چینلزکوبھارتی مواد نشر کرنے سے روک دیا

اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان نے لاہورہائیکورٹ کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے نجی چینلز کو بھارتی مواد نشر کرنے سے روک دیا۔ تفصیلات کے مطابق، منگل کو جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3رکنی بینچ نےلاہور ہائیکورٹ کی جانب سے نجی چینلز کو بھارتی مواد نشر کرنے کی اجازت دینے کے فیصلے کیخلاف پیمرا کی اپیل کی سماعت کی ۔ جسٹس گلزاراحمد نے پیمرا کے وکیل سے استفسارکیا کہ کیا اب بھی بھارتی مواد دیکھنا چاہتے ہیں؟ جس پر وکیل پیمرا نے مؤقف اپنایا کہ 2006میں 10 فیصد غیرملکی مواد نشرکرنے کی پالیسی آئی بھارتی مواد کی نشریات پاکستانی مواد نشرکرنے سے مشروط تھی تاہم بھارت میں پاکستان مواد نشر کرنے پر پابندی عائد کردی ۔ وکیل نے مزید بتایاکہ بھارت میں پاکستانی مواد نشرکرنے سے روکنے پرپاکستان میں بھی پابندی عائد کی گئی لیکن لاہور ہائیکورٹ نے نجی چینلز کو بھارتی مواد نشر کرنے کی اجازت دی۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کہ ہائیکورٹ کوپیمرا کے اختیارات میں مداخلت کا اختیارنہیں ہے۔ سپریم کورٹ نے بھارتی مواد پرپابندی ہٹانے کیخلاف پیمرا کی اپیل منظور کرتےہوئے ہائیکورٹ کا فیصلہ معطل کردیا ۔ سپریم کورٹ نے نجی چینلزپربھارتی مواد نشر کرنے سے روکتے ہوئے دراخواست نمٹا دی ۔

 

 

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Close
Close